loading...
Home / Urdu Post / گھنٹیا کے درد کیلئے زبردست آزمودہ گھریلو نسخہ !! یہ نسخہ آزمائیں اور چند دنوں میں جوڑوں کے درد سے نجات پائیں

گھنٹیا کے درد کیلئے زبردست آزمودہ گھریلو نسخہ !! یہ نسخہ آزمائیں اور چند دنوں میں جوڑوں کے درد سے نجات پائیں

گھنٹیا کے درد کیلئے زبردست آزمودہ گھریلو نسخہ !! یہ نسخہ آزمائیں اور چند دنوں میں جوڑوں کے درد سے نجات پائیں

گھنٹیا کے درد کیلئے زبردست آزمودہ گھریلو نسخہ !! یہ نسخہ آزمائیں اور چند دنوں میں جوڑوں کے درد سے نجات پائیں

گھنٹیا کے درد کیلئے زبردست آزمودہ گھریلو نسخہ !! یہ نسخہ آزمائیں اور چند دنوں میں جوڑوں کے درد سے نجات پائیں

اگرآپ کو اچانک اپنی کہنی ، انگوٹھے، پاؤں یاجسم کے کسی اور حصے کے جوڑ میں شدید دردکے ساتھ ساتھ ہلکی ہلکی سوزش محسوس ہو تو ممکن ہے یہ گنٹھیا کی علامات ہوں۔گنٹھیا آرتھرائٹس (جوڑوں کے درد)کی ہی ایک قسم ہے جس میں گنٹھیا کی اس جیسی علامات عموماًآدھی رات یا صبح سویرے ظاہر ہوتی ہیں۔اگر مریض کو یہ شدید درد پاؤں کے انگوٹھے میں محسوس ہو تو یہ اس بات کی نشاندہی ہے کہ یہ درد گنٹھیا کی وجہ سے ہی ہو رہاہے۔صرف چند ہی گھنٹوں میں انگوٹھے میں سے بہت زیادہ گرمی خارج ہو گی ، اس میں سوزش پیدا ہو جائے گی اور اس کو چھونے سے درد میں مزید اضافہ ہو گا۔

یہی وجہ ہے کہ گنٹھیا کو انگوٹھے اور پاؤں کی بیماری بھی کہا جاتا ہے۔
اسی طرح گنٹھیا کی بیماری گھٹنے ،کہنی،کلائی کو بھی متاثر کرتی ہے۔اس بیماری میں ایک وقت میں جسم کے مختلف حصوں میں شدید درد ہو سکتا ہے اور اس درد اور سوزش کو جاتے جاتے ایک سے دوہفتے لگتے ہیں لیکن اگر اس کا بروقت علاج نہ کیا جائے تو یہ درد اور سوزش کچھ عرصہ بعدانہیں جوڑوں یا کسی اور جوڑ میں دوبارہ ظاہرہوجاتے ہیں۔کیا آپ کو پتہ ہے گنٹھیا کا درد کیوں ہوتا ہے؟جسم میں یورک ایسڈ کی ضرورت سے زیادہ مقدار گنٹھیا کی وجہ سے بنتی ہے اور جسم میںیورک ایسڈ کی مقدار میں اضافے کا باعث بننے والی وجوہات میں

* الکوحل کا زیادہ استعمال
* بہت زیادہ دماغی ٹینشن کا ہونا
* ورزش کا معمول نہ ہونا
* کھانا کھانے کی کوئی خاص روٹین نہ ہونا کہ کبھی کھا لیا اور کبھی نہیں
* جسم میں ڈی ہائیڈریشن زیادہ ہو جانا
* اسپرین کا ضرورت سے زیادہ استعمال

وغیرہ یہ سب شامل ہیں۔ اس کے علاوہ عورتوں میں 45 سال کی عمر کے بعد ظاہر ہونے والی بیماری جسےMenopause کا نام دیا گیا ہے وہ بھی یورک ایسڈکی مقدار میں اضافے کا باعث بنتی ہے۔ایک سادہ اور آسان گھریلو نسخہ کے ذریعے آپ گنٹھیا کے درد سے چھٹکارا حاصل کر سکتے ہیں اور ا س کے دوبارہ ظاہر ہونے کے امکانات بھی ختم ہوجاتے ہیں ۔نسخہ یہ ہے۔

اجزاء
سرسوں کا تیل : ایک کپ
کافور : 10 گرام
ترکیب اور طریقہ استعمال
سرسوں کے تیل کو فرائی پین میں ڈال کر گرم کریں اور اس میں کافور ملاکر تب تک چولہے پر رکھیں جب تک کافورپگھل کر سرسوں کے تیل میں اچھے سے مکس نہیں ہو جاتا۔اب اس کو چولہے سے اتار لیں اورٹھنڈا ہونے دیں جب نیم گرم ہو جائے تواس سے جوڑوں اور انگوٹھوں پر مالش کریں۔ اس آئل سے روزانہ مالش کرنے سے انشاء اللہ گنٹھیا کا درد اور سوزش مکمل طور پر ختم ہوجائے گی۔

سیب میں موجود مالک ایسڈ جسم میں موجود یورک ایسڈ کو نیوٹرالائز کر دیتا ہے۔ اس لیے ہر دفعہ کھانا کھانے کے بعد ایک سیب ضرور کھائیں۔اسی طرح لیمو ں میں موجود سٹرک ایسڈ بھی یورک ایسڈ کو نیوٹرالائز کردیتا ہے۔اس کے لیے آدھے لیموں کوایک کپ پانی میں نچو ڑلیں اوردن میں دو دفعہ استعمال کریں۔

اگر گنٹھیا کا درد زیادہ شدت اختیار کر جائے تو برف کی ڈلیوں کو صاف کپڑے میں لپیٹ کر درد والی جگہ پر رکھیں اس سے درد کم ہو جائے گا لیکن یہ وقتی طور پرہوگا۔ہر روز 8 سے 10 گلاس پانی کے پئیں تا کہ یورک ایسڈ پیشاب کے ذریعے خارج ہو جائے

About admin

Check Also

گھر کے کونوں میں ایک چمچ نمک چھڑکیں پھردیکھیں

ہر گھر میں نمک، کالی مرچ اور لیموں تو ہوتے ہی ہیں مگر کیا آپ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *